سی پیک کے تحت گوادر میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری ہیں:کامیابیوں کی طرف سفرتیزی سے جاری ہے

سی پیک کے تحت گوادر میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری ہیں:کامیابیوں کی طرف سفرتیزی سے جاری ہے

سلام آباد: پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے چیئر مین لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ کا کہنا ہے کہ گوادر بندرگاہ متحرک اور فعال بندرگاہ ثابت ہوگی، سی پیک کے تحت گوادر میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے چیئر مین لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ گوادر میں بین الاقوامی شہر بننے کا پوٹینشل موجود ہے۔

عاصم سلیم باجوہ کا کہنا تھا کہ گوادر بندرگاہ متحرک اور فعال بندرگاہ ثابت ہوگی، سی پیک کے تحت گوادر میں ترقیاتی کام تیزی سے جاری ہیں۔

اس سے قبل عاصم سلیم باجوہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ سی پیک کے مغربی روٹ پرکام جاری ہے، حویلیاں پر بہت بڑی ڈرائی پورٹ قائم کی جائے گی اور چین سے آنے والا سامان حویلیاں پہنچے گا۔

انہوں نے بتایا تھا کہ ایران کے ساتھ سرحد پر باڑھ لگائی جا رہی ہے، 100 کلو میٹر طویل باڑھ جلد لگا دی جائے گی، ایم ایل ون کے تحت ریلوے ٹرانسمیشن نظام تبدیل کردیا جائے گا

Compare

Project Details

  • GDA Approved
  • 24/7 Electricity & Security
  • 800 Meters
  • 3500 Meters

Gwadar (گوادر) pronounced [ɡʷɑːd̪əɾ] is a port city on the southwestern coast of Balochistan,Pakistan and has an ancient history as early as the bronze age. Gwadar in Balochi language is a combination of two words Gwat meaning “wind” and Dar meaning “Gateway” Gwadar means “Gateway of Winds”. The ancient name of Balochistan is Makran which derived from the ancient Persian phrase “Mahi khoran” and the Persian empires ruled on Balochistan region. Achaemenid Persian Empire ruled in Balochistan for a long time. Gwadar was Conquered by the Persian Empire “Cyrus the great”Alexander’s Admiral Nearchus While homeward march stated that ” Travelling along Makran coast it was dry, surrounded by mountains and inhabited by “fish eaters”. After Alexander’s general Seleucus Nicator, the region was ruled by Mauryan around 303 BCE after peace agreement of Seleucus with Emperor Chandragupta and was ceded to the Mauryans.